اهل البيت

اسلامي احاديث خطب ادعية
 
الرئيسيةاليوميةس .و .جبحـثالأعضاءالمجموعاتالتسجيلدخول

شاطر | 
 

 صحیفه سجادیه 3

اذهب الى الأسفل 
كاتب الموضوعرسالة
Admin
Admin
avatar

المساهمات : 648
تاريخ التسجيل : 21/04/2016

مُساهمةموضوع: صحیفه سجادیه 3   الأحد أبريل 24, 2016 3:43 pm

بسم الله الرحمن الرحيم

اللهم و حملة عرشك الذين لا يفترون من تسبيحك ، و لا يسئمون من تقديسك ، و لا يستحسرونك من عبادتك ، و لا يؤثرون التقصير علي الجد في امرك ، و لا يغفلون عن الوله اليك .و اسرافيل صاحب الصور ، الشاخص الذي ينتظر منك الاذن ، و حلول الامر ، فينبه بالنفخة صرعي رهائن القبور .و ميكائيل ذو الجاه عندك ، و المكان الرفيع من طاعتك .و جبريل الامين علي وحيك ، المطاع في اهل سمواتك ، المكين لديك ، المقرب عندك .و الروح الذي هو علي ملائكة الحجب .و الروح الذي هو امرك ، فصل عليهم ، و علي الملائكة الذين من دونهم : من سكان سمواتك ، و اهل الامانة علي رسالاتك .و الذين لا تدخلهم سئمة من دؤب ، و لا اعياء من لغوب و لا فتور ، و لا تشغلهم عن تسبيحك الشهوات ، و لا يقطعهم عن تعظيمك سهو الغفلات .الخشع الابصار فلا يرومون النظر اليك ، النواكس الاذقان ، الذين قد طالت رغبتهم فيما لديك ، المستهترون بذكر الائك ، و المتواضعون دون عظمتك و جلال كبريائك .و الذين يقولون إذا نظروا الي جهنم تزفر علي اهل معصيتك : سبحانك مما عبدناك حق عبادتك .فصل عليهم و علي الروحانيين من ملائكتك ، و اهل الزلفة عندك ، و حمال الغيب الي رسلك ، و المؤتمنين علي وحيك .و قبائل الملائكة الذين اختصصتهم لنفسك ، و اغنيتهم عن الطعام و الشراب بتقديسك ، و اسكنتهم بطون اطباق سمواتك .و الذين علي ارجائها إذا نزل الامر بتمام وعدك .و خزان المطر و زواجر السحاب .و الذي بصوت زجره يسمع زجل الرعود ، و إذا سبحت به حفيفة السحاب التمعت صواعق البروق .و مشيعي الثلج و البرد ، و الهابطين مع قطر المطر إذا نزل ، و القوام علي خزائن الرياح ، و الموكلين بالجبال فلا تزول .و الذين عرفتهم مثاقيل المياه ، وكيل ما تحويه لواعج الامطار و عوالجها .و رسلك من الملائكة الي اهل الارض بمكروه ما ينزل من البلاء و محبوب الرخاء .و السفرة الكرام البررة ، و الحفظة الكرام الكاتبين ، و ملك الموت و اعوانه ، و منكر و نكير ، و رومان فتان القبور ، و الطائفين بالبيت المعمور ، و مالك ، و الخزنة ، و رضوان ، و سدنة الجنان .و الذين لايعصون الله ما امرهم ، و يفعلون ما يؤمرون .و الذين يقولون : سلام عليكم بما صبرتم فنعم عقبي الدار .و الزبانية الذين إذا قيل لهم : خذوه فغلوه ثم الجحيم صلوه ابتدروه سراعا ، و لم ينظروه .و من اوهمنا ذكره ، و لم نعلم مكانه منك ، و باي امر وكلته .و سكان الهواء و الارض و الماء و من منهم علي الخلق .فصل عليهم يوم يأتي كل نفس معها سائق و شهيد .و صل عليهم صلوة تزيدهم كرامة علي كرامتهم و طهارة علي طهارتهم .اللهم و إذا صليت علي ملائكتك و رسلك و بلغتهم صلوتنا عليهم فصل علينا بما فتحت لنا من حسن القول فيهم ، إنك جواد كريم .

اے اللہ ! تیرے عرش کے اٹھانے والے فرشتے جو تیری تسبیح سے اکتاتے نہیں اورنہ تیری عبادت سے خستہ وملول ہوتے ہیں اور نہ تیرے تعمیل امت میں سعی وکوشش کے بجائے کوتاہی برتتے ہیں اورنہ تجھ سے لو لگانے میں غافل ہوتے ہیں اور اسرافیل صاحب صور جو نظر اٹھائے ہوئے تیری اجازت اورنفاذ حکم کے منتظر ہیں تا کہ صور پھونک کر قبروں میں پڑے ہوئے مردوں کو ہوشیار کریں اور میکائیل جو تیرے یہاں مرتبہ والے اورتیری اطاعت کی وجہ سے بلند منزلت ہیں اورجبرئیل جو تیری وحی کے امانتدار اوراہل آسمان جن کے مطیع وفرمانبردار ہیں اورتیری بارگاہ میں مقام بلند اورتقرب خاص رکھتے ہیں اور وہ روح جو فرشتگان حجاب پر موکل ہے اور وہ روح جس کی خلقت تیرے عالم امر سے ہے اورسب پر اپنی رحمت نازل فرما اوراسی طرح ان فرشتوں پر جو ان سے کم درجہ اور آسمانوں میں ساکن اورتیرے پیغاموں کے امین ہیں اور ان فرشتوں پر جن میں کسی سعی کوشش سے بدلی اورکسی مشقت سے خستگی و درماندگی پیدا نہیں ہوتی اور نہ تیری تسبیح سے نفسانی خواہشیں انہیں روکتی ہیں اور نہ ان میں غفلت کی رو سے ایسی بھول چوک پیدا ہوتی ہے جو انہیں تیری تعظیم سے باز رکھے ۔ وہ آنکھیں جھکائے ہوئے ہیں کہ (تیرے نور عظمت کی طرف )نگاہ اٹھانے کا ارادہ بھی نہیں کرتے اورٹھوریوں کے بل گرے ہوئے ہیں اور تیرے یہاں کے درجات کی طرف ان کا اشتیاق بے حد و بے نہایت ہے اورتیری نعمتوں کی یاد میں کھوئے ہوئے ہیں اورتیری عظمت اورکبریائی کے سامنے سرافگندہ ہیں اور ان فرشتوں پر جو جہنم کو گنہگاروں پر شعلہ ور دیکھتے ہیں تو کہتے ہیں : پاک ہے تیری ذات ! ہم نے تیری عبادت جیسا حق تھا ویسی نہیں کی ۔(اے اللہ !) تو ان پر اورفرشتگان رحمت پر اور ان پر جنہیںتیری بارگاہ میں تقرب حاصل ہے اور تیرے پیغمبروں کی طرف چھپی ہوئی خبریں لے جانے والے اور تیری رحمت کے امانت دار ہیں اور ان قسم کے فرشتوں پر جنہیں تو نے اپنے لیے مخصوص کر لیا ہے اورجنہیں تسبیح اورتقدیس کے ذریعہ کھانے پینے سے بے نیاز کر دیا ہے اورجنہیں آسمانی طبقات کے اندرونی حصوں میں بسایا ہے اور ان فرشتوں پر جوآسمان کے کناروں میں توقف کریں گے جب کہ تیرا حکم وعدے کے پورا کرنے کے سلسلہ میں صادر ہو گا۔ اوربارش کے خزینہ داروں اوربادلوں کے ہنکانے والوں پر اوراس پر جس کے جھڑکنے سے رعد کی کڑک سنائی دیتی ہے اورجب اس ڈانٹ ڈپٹ پر گرجنے والے بد دل رواں ہوتے ہیں تو بجلی کو کوندے تڑپنے لگتے ہیں اور ان فرشتوں پر جو برف اور راویوں کے ساتھ ساتھ رہتے ہیں اور جب بارش ہوتی ہے تو اس کے قطروں کے ساتھ اترتے ہیں اور ہوا کے ذخیروں کی دیکھ بھال کرتے ہیں اور ان فرشتوں پر جو پہاڑوں پر موکل ہیں تاکہ وہ اپنی جگہ سے ہٹنے نہ پائیں اوران فرشتوں پر جنہیں تو نے پانی کے وزن اورموسلادھار اورتلاطم افزا بارشوں کی مقدار پر مطیع کیا ۔اوران فرشتوں پر جو نا گوار ابتلاوں اور خوش آیند آسائشوں کو لے کر اہل زمین کی جانب تیرے فرستادہ ہیں اور ان پر جو اعمال کا احاطہ کرنے والے گرامی منزلت اور نیکوکار ہیں اور ان پر جو نگہبانی کرنے والے کراما کاتبین ہیں اورملک الموت اور اس کے اعوان وانصار اورمنکر نکیر اوراہل قبور کی آزمائش کرنے والے رومان پراور بیت المعمور کا طواف کرنے والوں پر اور مالک اورجہنم کے دربانوں پر اور رضوان اورجنت کے دوسرے پاسبانوں پر اورفرشتوں پر جو خدا کے حکم کی نافرمانی نہیں کرتے اورجو حکم انہیں دیا جاتا ہے اسے بجا لاتے ہیں ۔ اور ان فرشتوں پر جو (آخرت میں )سلام علیکم کے بعد کہیں گے کہ دنیا میں تم نے صبر کیا ( یہ اسی کا بدلہ ہے ) دیکھو تو آخرت کا گھر کیسا اچھا ہے اور دوزخ کے ان پاسبانوں پر کہ جب ان سے یہ کہا جائے گا کہ اسے گرفتا ر کرکے طوق وزنجیر پہنا دو پھر اسے جہنم میں جھونک دو تو وہ اس کی طرف تیزی سے بڑھیں گے اور اسے ذرا مہلت نہ دیں گے۔ اور ہر اس فرشتے پر جس کا نام ہم نے نہیں لیا اور نہ ہمیں معلوم ہے کہ اس کا تیرے ہاں کیا مرتبہ ہے اور یہ کہ تو نے کس کام پر اسے معین کیا ہے اور ہوا زمین اورپانی میں رہنے والے فرشتوں پر اور ان پر جو مخلوقات پر معین ہیں ان سب پر رحمت نازل کر اس دن کہ جب ہر شخص اس طرح آئے گا کہ اس کے ساتھ ایک ہنکانے والا ہو گا اورایک گواہی دینے والا اور ان سب پر ایسی رحمت نازل فرما جو ان کے لیے عزت بالائے عزت اورطہارت بالائے طہارت کا باعث ہو۔ اے اللہ ! جب تو اپنے فرشتوں اوررسولوں پر رحمت نازل کرے اورہمارے صلوة وسلام کو ان تک پہنچائے تو ہم پر بھی اپنی رحمت نازل کرنا اس لیے کہ تو نے ہمیں ان کے ذکر خیر کی توفیق بخشی ۔ بے شک تو بخشنے والا اورکریم ہے ۔
الرجوع الى أعلى الصفحة اذهب الى الأسفل
معاينة صفحة البيانات الشخصي للعضو http://duahadith.forumarabia.com
 
صحیفه سجادیه 3
الرجوع الى أعلى الصفحة 
صفحة 1 من اصل 1

صلاحيات هذا المنتدى:لاتستطيع الرد على المواضيع في هذا المنتدى
اهل البيت :: الفئة الأولى :: quran dua hadith in urdu باللغة الباكستان :: صحیفه سجادیه-
انتقل الى: